سعودی سربراہی میں عسکری اتحاد، پاکستان میں ایک بار سوالات

سعودی عرب کی سربراہی میں بننے والے عسکری اتحاد پر ایک بار پھر پاکستان میں سوالات اٹھنا شروع ہوگئے ہیں اور اس پر تبصرے بھی کیے جارہے ہیں۔

Flagge Saudi-Arabiens (picture-alliance/blickwinkel/McPHOTO/K. Steinkamp)

اس بار یہ سوالات ذرائع ابلاغ میں آنے والی ان اطلاعات کے بعد اٹھائے گئے، جن میں کہا گیا ہے کہ راحیل شریف اس عسکری اتحاد کی سربراہی سے دست بردار ہونے کا سوچ رہے ہیں۔ پاکستان کے بعض چینلز نے دعویٰ کیا ہے کہ راحیل شریف کو خدشہ ہے کہ یہ اتحاد دہشت گردی کے بجائے کسی ایک ملک کے خلاف ہوگا جب کہ سابق آرمی چیف اس اتحاد میں امریکی مداخلت پر بھی تحفظات رکھتے ہیں۔

Pakistan General Raheel Sharif (Getty Images/AFP/S. Kodikara)میڈیا اطلاعات کے مطابق راحیل شریف اس عسکری اتحاد کی سربراہی سے دست بردار ہونے کا سوچ رہے ہیں

روزنامہ ایکسپریس ٹریبون کے مطابق پاکستان اس اتحاد کے حوالے سے حدود متعین کرتا رہا ہے تاکہ اس کے منفی اثرات سے بچا جائے۔ اخبار کا کہنا تھا کہ اپریل میں جب حکومت نے راحیل شریف کو اس اتحاد کی سربراہی کرنے کی اجازت دی تھی تو یہ خیال کیا جارہا تھا کہ اسلام آباد نے اس اتحاد میں شمولیت اختیار کرلی ہے لیکن ایک سرکاری ذریعے نے اخبار کو بتایا کہ اس اتحاد میں شمولیت کے حوالے سے کوئی حتمی فیصلہ ابھی تک نہیں کیا گیا۔ لیکن کئی تجزیہ نگار اس بات کو ماننے کے لیے تیار نہیں ہیں کہ یہ فیصلہ صرف ایرانی تحفظات کے پیشِ نظر کیا گیا ہے۔

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s