مانچیسٹر ایرینا میں ’دھماکے سے متعدد ہلاکتیں

مانچیسٹر ایرینا میں پولیس نے ایک کنسرٹ کے دوران دھماکے کے نتیجے میں متعدد ہلاکتوں کی تصدیق کی ہے جبکہ درجنوں افراد زخمی ہیں۔

عینی شاہدین کے مطابق انھوں نے ایک زور دار آواز سنی۔

دھماکہتصویر کے کاپی رائٹAFP
Image captionمتاثرہ افراد کی مدد کے لیے پہنچنے والے ایمرجنسی سروسز کے اہلکار

جائےحادثہ پر امدادی کارروائیاں جاری ہیں اور زخمیوں کو ہسپتال منتقل کیا جا رہا ہے جبکہ قریبی ٹرین سٹیشن، مانچیسٹر وکٹوریہ سٹیشن بند کر دیا گیا ہے۔

بی بی سی کے نامہ نگار ڈینیل سٹینفرڈ نے ذرائع کے حوالے سے خبر دی ہے کہ حکام اس واقعے کو ممکنہ طور پر دہشت گردی کی کارروائی قرار دے رہے ہیں۔

اس سے قبل عینی شاہدین نے کہا تھا کہ انھوں نے ایک زور دار دھماکے کی آواز سنی جس کے بعد بھگدڑ مچ گئی۔

کنسرٹتصویر کے کاپی رائٹTWITTER

کنسرٹ میں امریکی سنگر آریانا گرینڈے پرفارم کر رہی تھیں۔ ان کے ترجمان کے مطابق وہ خیریت سے ہیں۔

پولیس نے عوام سے کہا ہے کہ وہ متاثرہ علاقے سے دور رہیں اور واقعے میں ہلاک اور زخمی ہونے والوں کی تفصیلات جلد فراہم کی جائیں گی۔

ایک عینی شاہد 22 سالہ روبرٹ ٹیمپکن نے بتایا کہ’ہر ایک چیخ رہا تھا اور بھاگ رہا تھا، فرش پر لوگوں کے کوٹ اور فون گرے ہوئے تھے۔ لوگوں نے ہر چیز پھینک دی۔‘

انھوں نے بتایا کہ کچھ لوگ چیخ رہے تھے کہ انھوں نے خون دیکھا ہے۔ تاہم دیگر کہہ رہے تھے غبارہ پھٹنے یا سپیکر کی زوردار آواز آئی ہے۔

مانچیسٹرتصویر کے کاپی رائٹ@SAMWARDMCR/TWITTER

روبرٹ کے مطابق ’وہاں بہت سی ایمبولینسز تھیں۔ میں نے دیکھا کہ کسی کو طبی امداد دی جا رہی تھی۔ میں یہ نہیں بتا سکتا کہ اسے کیا ہوا تھا۔‘

اطلاعات کے مطابق کنسرٹ کے مقام پر 21 ہزار افراد کی گنجائش موجود ہے اور حادثے کے وقت وہاں ہزاروں افراد موجود تھے جن میں بڑی تعداد نوجوانوں کی تھی۔

blastتصویر کے کاپی رائٹPA

راکیل نامی عینی شاہد نے بتایا کہ وہ مانچیسٹر ایرینا کے بلاک نمر 213 میں اپنی 14 سالہ بیٹی کے ہمراہ موجود تھیں۔ وہ کہتی ہیں کہ بھیٹر سے بچنے کے لیے انھوں نے کنسرٹ کے اختتام سے قبل ہی باہر نکلنے کا فیصلہ کیا۔

ان کا کہنا تھا کہ ‘جیسے ہی ہم باہر نکلے ہم نے ایک زور دار آواز سنی، پہلے تو ہم نے سوچا ہم نے کنسرٹ میں کچھ مِس کر دیا ہے، جیسے ہی ہم واپس پلٹے وہاں لوگوں کو ہجوم تھا جو اپنے قدموں پر گر رہے تھے لوگ فرش پر گرے ہوئے تھے۔’

گارڈین سے منسلک صحافی فرانسس پیراڈن کے مطابق کنسرٹ کے مقام کا جائزہ لینے کے لیے بم ڈسپوزل سکواڈ کی گاڑیاں پہنچ گئی ہیں۔

Advertisements

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s