10 ارب روپے پیشکش کا الزام: عمران خان سے معافی مانگنے کا مطالبہ:وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف

وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے پاناما لیکس کے معاملے پر خاموش رہنے کے عوض 10 ارب روپے کی پیشکش کے الزام پر پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان کو قانونی نوٹس بھجوادیا۔

jirga-with-saleem-safi-cm-punjab-shahbaz-sharif-exclusive-interview-14th-december-2014

اپنے وکیل خواجہ حارث کے توسط سے عمران خان کو بھیجے گئے نوٹس میں وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے عمران خان سے 14 روز میں معافی مانگنے کا مطالبہ کیا، دوسری صورت میں ان کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے گی۔

ہتک عزت آرڈیننس 2002 کی سیکشن 8 کے تحت بھیجے گئے نوٹس میں مطالبہ کیا گیا کہ عمران خان اُسی طرح میڈیا پر آکر سب کے سامنے معافی مانگیں، جس طرح انھوں نے یہ الزام عائد کیا تھا۔

یاد رہے کہ گذشتہ ماہ 25 اپریل کو پشاور میں شوکت خانم میموریل کینسر ہسپتال میں شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نے دعویٰ کیا تھا کہ انہیں وزیراعظم نواز شریف نے پاناما پیپر لیکس کے معاملے پر خاموشی اختیار کرنے کے عوض 10 ارب روپے کی پیشکش کی تھی۔

عمران خان کے فیس بک اکاؤنٹ پر پوسٹ کی گئی ویڈیو میں عمران خان کہتے ہوئے نظر آئے تھے، جے آئی ٹی کے معاملے پر ‘اگر ہم چپ کرکے بیٹھ جائیں تو وزیراعظم نواز شریف کے پاس بہت وسائل ہیں’۔

عمران خان کا مزید کہنا تھا کہ ‘ہمیں اس بات کا خطرہ ہے کہ تحقیقات کرنے والے سارے ادارے ان کے ماتحت ہیں’۔

چیئرمین پی ٹی آئی کے مطابق ‘اب وزیراعظم اس معاملے سے نکل نہیں سکتے تاہم اگر ہم چپ کرکے بیٹھ جائیں تو ان کے پاس بہت وسائل ہیں، جب مجھے چپ کرنے کے لیے 10 ارب روپے آفر کرسکتے ہیں تو یہ اداروں کو کتنا آفر کرسکتے ہیں؟’۔

عمران خان کے مذکورہ بیان کی ویڈیو سوشل اور الیکٹرانک میڈیا پر وائرل ہونے کے بعد دیگر لیگی رہنماؤں اور وزیراعظم نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز نے بھی اس پر اپنے ردعمل کا اظہار کیا اور عمران خان کے دعوے کو مسترد کرتے ہوئے انہیں ‘جھوٹا’ قرار دیا۔

اس معاملے پر ایک پریس کانفرنس کے دوران پنجاب حکومت کے ترجمان ملک احمد خان نے کہا تھا کہ عمران خان 3 دن کے اندر اُس شخص کا نام بتائیں جو ان تک یہ آفر لے کر آیا۔

ساتھ ہی ان کا کہنا تھا کہ عمران خان کو کورٹ آف لاء میں لے جایا جائے گا، ’ان کے خلاف ہتک عزت کا کیس دائر کریں گے اور اس حوالے سے ہم قانونی نوٹس بھیج رہے ہیں‘۔

بعدازاں 28 اپریل کو چیئرمین عمران خان نے اسلام آباد میں ایک جلسے کے دوران کہا کہ 10 ارب روپے کی پیش کش کرنے والے شخص کا نام وہ عدالت میں بتائیں گے اور اس پاکستانی تاجر کے تحفظ کے لیے عدالت سے درخواست بھی کریں گے۔

30 اپریل کو کراچی میں میڈیا سے بات چیت میں عمران خان نے کہا تھا کہ ‘جس شخص نے 10 ارب روپے کی پیشکش کی وہ لاہور میں ہی رہتا ہے‘۔

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s