ٹرمپ،پیوٹن کے درمیان شام،شمالی کوریا کے معاملات پر گفتگو

شام میں امریکی فضائی حملے کے بعد امریکا ۔ روس تعلقات میں کشیدگی کے باعث امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور ان کے روسی ہم منصب ولادی میر پیوٹن کے درمیان پہلی ٹیلی فونک گفتگو میں شام میں کشیدگی ختم کرنے کے لیے مشترکہ کوششوں سے متعلق تبادلہ خیال کیا گیا۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی ’رائٹرز‘ کے مطابق وائٹ ہاؤس کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا کہ ’دونوں رہنماؤں نے اتفاق کیا کہ تمام فریقین کو شام میں کشیدگی ختم کرنے کے لیے اپنی پوری کوشش کرنی چاہیئے، جبکہ ڈونلڈ ٹرمپ اور ولادی میر پیوٹن نے پورے مشرق وسطیٰ میں دہشت گردوں کے خاتمے کے لیے مشترکہ کوششوں پر بھی تبالہ خیال کیا۔‘

بیان کے مطابق ’دونوں رہنماؤں کے درمیان خوشگوار ماحول میں گفتگو ہوئی جس میں پائیدار امن قائم کرنے سمیت مختلف امور زیر غور آئے۔‘

واضح رہے کہ کیمیائی ہتھیاروں کے حملے کے ردعمل کے طور پر 4 اپریل کو شامی ایئربیس پر 59 کروز میزائل داغے جانے کے ڈونلڈ ٹرمپ کے فیصلے پر روس نے ناراضگی کا اظہار کیا تھا اور دونوں ممالک کی حکومتوں کے درمیان تلخ جملوں کا تبادلہ ہوا تھا۔

یہ بھی پڑھیں: شام: مہلک گیس حملے سے کئی افراد ہلاک

وائٹ ہاؤس کے بیان میں مزید کہا گیا کہ امریکا، شام میں سیز فائر کے لیے بدھ اور جمعرات کو قازقستان کے دارالحکومت آستانہ میں ہونے والے مذاکرات کے لیے اپنا نمائندہ بھیجے گا۔

بیان کے مطابق ’امریکی و روسی صدور نے شمالی کوریا میں انتہائی خطرناک صورتحال کے بہترین حل سے متعلق بھی بات چیت کی۔‘

Advertisements

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s